Tag Archives: شاہداقبال شامی

دسمبر

  شاہداقبال شامی گزرے وقتوں میں جب بھی دسمبر آیا لوگوں کو اداس کر گیا،پریشان کر گیا دسمبر کے آتے ہی لوگ غمگین ہو جاتے گزرے وقتوں کو یاد کرتے آنسو بہاتے جس کا اظہار جابجا بکھرا پڑا ہے شاعری۔۔۔۔۔

رول ماڈل

  شاہداقبال شامی دل دل پاکستان ہر پاکستانی کے دل میں بسانے والا ہر دل کو رلا گیا گانا گاتا تھاتو لاکھوں پرستار تھے ایک جھلک کے لئے آگے پیچھے گھومتے تھے نعت پرھنا شروع کی تو کروڑوں کے دل۔۔۔۔۔

رب جس کا سب اس کا

  شاہداقبال شامی دیکھو آج تو یہ بھی حج پر جارہا ہے ملک صاحب نے چم چم منہ میں ٹھونستے ہوئے کہا ہاں یار سوچنے والی بات ہے اس کے پاس اتناپیسہ کہاں سے آیا تیسرے جامن پر ہاتھ صاف۔۔۔۔۔

تمام مسائل کا حل

  شاہداقبال شامی بارڈر پر کشیدگی میں اضافہ،سیکورٹی فورسز پر حملوں میں تیزی مطالبات کے حق کے لئے ڈاکٹروں کی ہڑتال وکلاء کا جلاؤ گھیراؤ ،صحافیوں کی ہائے ہائے کسانوں کی حکومت کے خلاف نعرے بازی اساتذہ کاامتحانات کا بائیکاٹ۔۔۔۔۔

الزام

  شاہداقبال شامی یار یہ بڑھیا بڑی گھوسٹ ہے اس کا کچھ کرنا پڑے گا یہ پلاٹ بہت قیمتی ہے اگر ہمارے ہاتھ لگ گیا تو وارے نیارے ہو جائیں گے ایسا کرتے ہیں اس کو دھکے دے کر نکال۔۔۔۔۔

حلم وفا کا پیکرملک حاکمین خان

  شاہداقبال شامی وہ13اکتوبر 1999کی ایک چمکتی صبح تھی جب پہلی دفعہ میرے شعور نے آنکھ کھولی گاؤں سے شہر جانے کے لئے اس دن جانے کیوں کوئی گاڑی نہیں تھی تانگہ پر بیٹھ کر عازم سفر ہوا راستہ میں۔۔۔۔۔

کچھ علاج اس کابھی .

  شاہداقبال شامی وطن صرف میدانوں،پہاڑوں،دریاؤں اور صحراؤں کا مجموعہ ہی نہیں ہوتابلکہ یہ انسان کے اس مسکن کا نام ہے جہاں آزادی کی ہوائیں چلتی ہیں،جہاں عدل و انصاف کے چشمے ابلتے ہیں اور جہاں انسانیت ظالموں اور مظلوموں۔۔۔۔۔

اپنا اپنا چورن

  شاہداقبال شامی شکر الحمدللہ!آج ایک اہم فرض سے سبکدوش ہو گیا آج میرے سر سے بہت بڑا بوجھ اتر گیا بیٹی کو قرآن کے سائے میں رخصت کیا تمام مہمانوں کو سنت کے مطابق بیٹھ کر کھانا کھلایا ہے۔۔۔۔۔

اپنی طرزکی ایک انوکھی تقریب

  شاہداقبال شامی میں نے زندگی میں بے شمارعلمی،ادبی،سماجی،سرکاری اور غیر سرکاری تقریبات میں کبھی بطورسامع تو کبھی بطور مقرر اور کبھی مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کی مگر ”پاکستان رائیٹرزونگ”کے زیر اہتمام 24مئی کو رضا ہال ملتان میں۔۔۔۔۔

( صرف محرم ہی میں کیوں؟؟؟)

  شاہداقبال شامی عاشورہ کا دن یہودیوں کے نزدیک بھی متبرک ہے اور وہ اس دن کو روزہ رکھا کرتے تھے ،اللہ کے آخری نبیﷺ نے فرمایا تھا کہ”میں اگراگلے سال اگر زندہ رہا تو میں دوروزے رکھو گاتا کہ۔۔۔۔۔