عافیہ کی سزا کے 7 سال حکمرانوں کیلئے شرمناک‘ امریکی نظام کی موت ہے

کراچی/ جہانیاں (آن لائن+ صباح نیوز) ڈاکٹر عافیہ کی ہمشیرہ اور عافیہ موومنٹ کی رہنما ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے کہا ہے امریکی اور پاکستانی حکمران عافیہ کو انصاف دیں۔ جرم بے گناہی کی پاداش میں عافیہ کی 86 سالہ سزا کے 7 سال مکمل ہونا حکمرانوں اور قومی رہنمائوں کیلئے شرمناک اور امریکی نظام انصاف کی موت ہے۔ حکمرانوں اور ارباب اختیار نے عافیہ کی وطن واپسی کے بے شمار نادر مواقع ضائع کئے۔ اب کوئی موقع ضائع نہیں ہونا چاہئے۔ عافیہ کو امریکہ کے حوالے کرنے کی غلطی کو درست کیا جائے۔ وہ کراچی پریس کلب پر مظاہرین سے خطاب کر رہی تھیں۔ اس موقع پر سول سوسائٹی اور مختلف سماجی و سیاسی رہنما، وکلائ، اساتذہ، طلباء و طالبات اور عافیہ موومنٹ کے رضاکاروں کی بڑی تعداد موجود تھی۔ ڈاکٹر فوزیہ نے کہا امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ امریکہ کو دوبارہ عظیم بنانا چاہتے ہیں تو وہ عافیہ کیس جیسی ناانصافیوں کا خاتمہ اور ان کا ازالہ بھی کریں۔ عافیہ امریکی ناانصافیوں پاکستانی رہنمائوں کی بزدلی اور بے حسی کی مثال ہے۔ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب میں عافیہ کا ذکر نہ کرکے قوم کی توہین کی ہے۔ پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما ایڈووکیٹ قادر خان مندوخیل نے کہا عافیہ کے اہل خانہ کا کہنا ہے ان کا ڈاکٹر عافیہ سے 2 سال سے رابطہ نہیں کرایا گیا۔ ہیومن رائٹس نیٹ ورک کراچی کے صدر انتخاب عالم سوری نے کہا عافیہ پاکستان کی بیٹی ہے۔ اس کا امریکی قید میں گزرنے والا ہر دن پوری قوم کیلئے ندامت کا باعث ہے۔ عبدالوحید نے کہا عافیہ کی 86 سال کی سزا دنیا کی عدالتی تاریخ کا شرمناک باب ہے۔ پروفیسر حکیم عسکری نے کہا خاکسار تحریک قوم کی بیٹی کی وطن واپسی تک عافیہ موومنٹ کے ساتھ ہے۔ احمد حسین ہارون نے مطالبہ کیا حکمران عافیہ کو واپس وطن لائیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *