بھارت: سکول میں 7 سالہ بچے کی ہلاکت پر شدید احتجاج

نئی دہلی (آن لائن )بھارت کے دارالحکومت نئی دہلی کے قریب واقع ایک بین الاقوامی اسکول کی انتظامیہ کے رکن کی جانب سے سات سالہ بچے کو چھری کےوار سے قتل کرنے پر شدید احتجاج کیا گیا جبکہ مظاہرین اور پولیس کے درمیان تصادم ہوا۔گرگاو¿ں میں واقع ریان انٹرنیشنل اسکول کے باتھ روم سے سات سالہ بچے کی لاش برآمد ہوئی تھی جس کے بعد اسکول انتظامیہ کے ایک رکن کو گرفتار کیا گیا۔سکول کی انتظامیہ نے پرنسپل کو معطل کرتے ہوئے تفتیش میں مکمل تعاون کی یقین دہانی کرادی ہے۔پولیس کا کہنا تھا کہ مبینہ طور پر اسکول بس کے منتظم نے جنسی زیادتی کی کوشش کی تاہم بچے کی جانب سے مزاحمت کی گئی جس کے بعد ان پر چاقو سے حملہ کیا گیا۔اےایف پی کو گرگاو¿ں پولیس کے ڈپٹی کمشنرسمر دیپ سنگھ نے بتایا کہ ‘تفتیش کے دوران ملزم نے جرم کا اعتراف کیا ہے’۔ان کا کہنا تھا کہ بچے نے جنسی زیادتی کی کوشش پر مزاحمت کی جس پر حملہ آور نے اپنے جرم کو چھپانے کے لیے انھیں قتل کرنے کا فیصلہ کیا جبکہ ملزم گزشتہ آٹھ ماہ سےاسی اسکول میں کام کررہے تھے۔مذکورہ واقعے کے بعد اسکول کے ایک ہزار کے قریب بچوں کے والدین نے ادارے کے سربراہ کو گرفتار کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے اسکول کو نذرآتش کرنے کی کوشش کی۔پولیس کی بڑی تعداد جائے وقوعہ پر پہنچ گئی اوراسکول کی عمارت کو گھیرے میں لے کر مزید کسی نقصان سے بچالیا۔اسکول کی انتظامیہ نے پرنسپل کو معطل کرتے ہوئے تفتیش میں مکمل تعاون کی یقین دہانی کرادی ہے۔انتظامیہ کا کہنا ہے کہ انھوں نے تفتیش کا آغاز کردیا ہے نئی دہلی میں قائم شاخ میں گزشتہ سال اس وقت ایک تنازع سامنے آیا تھا جب 6 سالہ بچے کی لاش پانی کی ٹینکی سے برآمد ہوئی تھی جس کے بعد پولیس نے اسکول کے پرنسپل اور انتظامیہ کے دیگر اراکین سمیت ایک استاد کو گرفتار کیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *