جتوئی دریائے سندھ میں کشتیوں پر اوور لوڈنگ کسی بھی بڑے حادثے کا پیش خیمہ بن سکتی ہے

جتوئی( وقاص اسلم رانا سے ) دریائے سندھ میں کشتیوں پر اوور لوڈنگ کسی بھی بڑے حادثے کا پیش خیمہ بن سکتی ہے ڈپٹی کمشنر نوٹس لے کر کاروائی کریں وائس آف سوسائٹی نیوزکے مطابق جھگی والا کے نزدیک موچی والہ پتن پر کشتیاں اور لانچیں مسافروں کو جتوئی سے فاضل پور اور فاضل پور سے جتوئی پہنچاتی ہیں (100 ) روپے فی کس کے حساب سے کرایہ لیا جاتا ہے جو کہ سرا سرزیادتی ہے اس کے علاوہ (30 ) مسافروں کی گنجائش والی کشتی میں (60 ) سے زائد مسافر بٹھائے جاتے ہیں اور (10 ) سے (15 ) موٹرسائیکل اور دیگر سامان بھی لوڈ کیا جاتا ہے جس سے کشتی کے ڈوبنے کے خدشات رہتے ہیں دریائے سندھ میں پانی کی سطح میں مسلسل اضافہ سے بہاؤ میں بھی تیزی آگئی ہے مقامی آبادی کشتیوں کی اوور لوڈنگ سے سخت پریشان ساجد حسین ، رحیم بخش ، خدا بخش ، کرم داد ، غلام علی و دیگر نے صحافیوں کو بتایا کہ سندھ دریا ایک خوفناک دریا ہے اور اس میں مقامی جاگیرداروں کی کشتیاں اور لانچیں مسافروں سے ناجائز کرائے وصول کر رہی ہیں اور اوور لوڈنگ سے خدا نخواستہ کوئی بڑا حادثہ رونما ہو سکتا ہے انہوں نے ڈپٹی کمشنر مظفر گڑھ سے نوٹس لے کر کاروائی کی اپیل کی ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *