محکمہ زکوٰۃوعشر آزاد حکومت ریاست جموں و کشمیر نے پانچ سالہ این بی ایس پروگرام کا باقاعدہ آغاز کردیا گیا ہے

آزاد کشمیر(اسماعیل بٹ سے)محکمہ زکوٰۃوعشر آزاد حکومت ریاست جموں و کشمیر نے پانچ سالہ این بی ایس پروگرام کا باقاعدہ آغاز کردیا گیا ہے پروگرام کے تحت ریاست بھر کے غریب اور نادار افراد کی ہر ممکن بحالی کیلئے زبر دست اقدامات تجویز کئے گئے ہیں۔ چھ پوائنٹس پرمشتمل ایجنڈا میں آزاد کشمیر میں بسنے والے غریب خاندانوں کی بحالی کیلئے مالی اعانت ، مستحق اور نادار افراد کو علاج کی مفت سہولت ، اسلامی اور روائتی تعلیم کے فروغ کیلئے سکالر شپ کی تعداد میں اضافہ، معذور افراد کی ہر ممکن بحالی، غریب خاندانوں کی بیٹیوں کی شادی کیلئے دیئے جانے والے فنڈز میں اضافہ اور مستحق ہنر مند افراد کی خود کفالت شامل ہیں۔محکمہ زکوٰۃوعشر نے اس پانچ سالہ پروگرام کے ہر سال کو ایک خاص ایجنڈا کی نسبت سے جاری رکھنے کا پلان دیا ہے جس کے مطابق آنے والے سالوں کو تعلیم علاج معذور افراد اور ہنر مند افراد کیلئے موسوم کیا جائے گا۔22 مارچ 2017ء دن ۱۱ بجے پروگرام کے باقاعدہ آغاز کے موقع پر صاحبزادہ محمد سلیم چشتی چیئرمین آزاد جموں و کشمیر زکوٰۃ کونسل، سیکرٹری زکوٰۃ وعشر غلام بشیر مغل، چیف ایڈمنسٹریٹر زکوٰۃوعشر راجہ محمد ارشاد خان اور ایڈمنسٹریٹر زکوٰۃوعشر چوہدری مجید احمد نے پروگرام کی افتتاحی دستاویز پر دستخط کئے۔اس تقریب کے باقاعدہ آغاز سے کچھ دیر قبل تمام اہم دفاتر میں پروگرام کے تعارفی پوسڑ باقاعدہ طور پر نصب کئے گئے تھے۔ محکمہ زکوٰۃ وعشر کی جانب سے یہ پہلا طویل مدتی پروگرام ہوگا جو کہ ریاست میں اس نظریہ کے تحت متعارف کرایا جارہا ہے کہ زکوٰۃ فنڈ کی آمدن میں جس قدر اضافہ ممکن ہوگا اسی کے مطابق ریاست کے غریب اور نادار طبقات کی بحالی ممکن ہوسکے گی۔ ایک محتاط اندازے کے مطابق پہلے مرحلہ میں آزاد کشمیر زکوٰۃ فنڈ ریزنگ کمپین2017ء کے کامیاب ہونے کی صورت میں ریاست کے غریب اور نادار ا افراد اور بیمار و لاچار سسکتی انسانیت اور بے بس معذور افراد کی بحالی کیلئے فوری طور پر50سے70 فیصد تک رقومات میں اضافہ تجویز کیا گیا ہے۔ان خیالات کا اظہار راجہ محمد ارشاد خان چیف ایڈمنسٹریٹر زکوٰۃوعشر نے اپنے آفس چیمبر میں غلام بشیر مغل سکیرٹری زکوٰہ و سماجی بہبود کی زیر صدارت صحافیوں کو ملٹی میڈیا پر بریفنگ دیتے ہوئے کیا۔ بریفنگ میں ایڈمنسٹریٹر زکوٰہ و عشر چوہدری مجید احمد،عمر اشفاق جو اس پروگرام کے منیجر ہیں سید ظہیر نقوی اسسٹنٹ اکونٹس آفیسر زکوٰۃ و عشر جو کہ سیکرٹری کمیٹی ہیں موجود تھے۔ بریفنگ میں مزید بتایا گیا کہ اس پروگرام کے تحت پہلے سال ایجنڈے کو فوکس کیا جائے گاجبکہ سال 2017-18 ء کو تعلیم کا ، 2018-19 صحت اور معذوروں کی بحالی ،2020-21 نادار بچیوں کی شادی کے لئے فنڈز میں اضافہ ،2021-22 ء مستحق ہنر مندوں کی کفالت کے لئے فنڈز مہیا کئے جائیں گے۔ ان سارے شعبوں کے لئے فنڈز ریزنگ کر کے 50 سے 70 فیصد ٹارگٹ حاصل کیے جائیں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ادارہ پر لوگوں کا اعتماد بحال کرواتے ہوئے زکوٰۃ وعشر جمع کرا نے کے لئے قائل کیا جائے گا۔ عشر کے سسٹم کو بحال کیا جائے گا۔ سیکرٹری زکوٰۃ وعشر نے کہا کہ 11 ہزار سے زائد افراد جو نظام زکوٰۃ سے منسلک ہیں اور ملازمین زکوٰۃ ریاست بھر میں آگاہی و شعور کے حوالہ سے کردار ادا ء کریں گے۔ لوگوں کو مذہبی فریضہ کی ادائیگی کے لئے قائل کیا جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ عوام آگاہی کے پروگرام ، سیمینارز ، کانفرنسز میں سیاسی و سماجی شخصیات، علمائے کرام، مالیاتی ادارہ کے سربراہان،الیکٹرانک و پرنٹ میڈیا کے نمائندگان کو مدعو کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ زکوٰۃ وعشر کا پیسہ 100 فیصد مستحق افراد تک پہنچ رہا ہے۔ ریاست کے 68 ہزار سے زائد مستحقین کو ماہانہ امداد کے علاوہ علاج معالجہ ، تعلیم اور دیگر شعبوں میں امداد دی جارہی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *