ریاست شہری حقوق کی حفاظت یقینی بنائے۔محمدناصراقبال خان

عوام کو نظام پر اعتماد نہیں رہا ۔سعید کھوکھر،رابعہ رحمن،رضاایڈووکیٹ،ندیم اشرف

ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی صدرمحمدناصراقبال خان،چیف آرگنائزر میاں محمدسعید کھوکھرایڈووکیٹ،آرگنائزررابعہ رحمن ، سیکرٹری جنرل محمدرضاایڈووکیٹ ،سینئر نائب صدور ندیم اشرف،تنویرخان،میاں زاہدلطیف ،سلمان پرویز ،مرکزی نائب صدور ناصرچوہان ایڈووکیٹ، ممتاز حیدر اعوان ،محمدشاہدمحمود ،صدر پنجاب محمدیونس ملک ،صدرمدینہ منورہ سرفرازخان نیازی،صدر چنیوٹ راناشہزادٹیپو ،صدرفیصل آبادندیم مصطفی اورصدرقصور میاں اویس علی نے کہا ہے کہ ریاست شہری حقوق کی حفاظت یقینی بنائے۔عوام کا ریاستی نظام پراعتمادبرقرار نہیں رہا، عام آدمی کوکسی سطح پراقتدارمیں شریک نہیں کیا جاتا۔عوام کے ٹیکس کاپیسہ کہاں اورکیوں استعمال ہوگا ،ان سے قطعی نہیں پوچھا جاتا۔انسانوں کے حقوق بری طرح متاثر ہورہے ہیں،تعمیروترقی کی آڑ میں شہریوں کی صحت سے کھیلنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔مشاورت کوسیاست اورجمہوریت کاحسن کہاجاتا ہے مگر ہمارے ملک میں یہ رواج ختم ہوگیا۔حکمران تنہا فیصلے کرتے ہیں جس کے نتیجہ میں عوام کی سیاسی اہمیت اوروقعت ختم ہوگئی ہے ۔ہنرمندافرادکوبیروزگاری جبکہ ان کے عزیز واقارب کومہنگائی کی آگ میں جھونک دیاگیا ہے۔وہ ایک اجلا س سے خطاب کررہے تھے ۔محمدناصراقبال خان نے مزید کہا کہ حکومت شاہراہیں ضروربنائے مگرشہریوں کی صحت کودرپیش خطرات پربھی قابوپانا ہوگا ۔ناقص پانی کے استعمال اورماحولیاتی مسائل کے نتیجہ میں شہری بڑی تعدادمیں بیمار ہورہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ علاج کیلئے سرکاری ہسپتال جانیوالے لوگ مزید بیمار ہوجاتے ہیں جبکہ عام آدمی نجی ہسپتال جانے کی سکت نہیں رکھتا ۔ استحصال سمیت متعددمعاشرتی برائیوں سے نجات کاراستہ قانون کی حکمرانی اورانصاف کی فراوانی سے ہوکرجاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ صحت اورتعلیم کیلئے مختص فنڈز چند مخصوص شاہراہوں پرصرف نہیں کئے جاسکتے ۔عوام کوقومی وسائل میں سے ان کاجائز حق دیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ حکمران اشرافیہ اپنی مراعات میں نمایاں کمی جبکہ مزدوروں کی اجرت میں خاطرخواہ اضافہ کرے ۔اپنے ہاتھوں اپنی زندگی ختم کرنے کارجحان بڑھ رہا ہے ،ریاست شہریوں کی نفسیات سے چشم پوشی نہ کرے ۔انہوں نے کہا کہ حکمران معاشرے کے پسماندہ اورناخواندہ طبقات سے منہ نہ موڑیں ،انہیں سینے سے لگایاجائے ۔پاکستان کے عوام انتہائی باصلاحیت ہیں مگران سے استفادہ نہیں کیاجاتا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *