پاکستان میں ڈیزاسٹرمینجمنٹ کافقدان ہے۔ الطاف شاہد

پی آئی اے سمیت قومی اداروں میں سیاسی مداخلت نے انہیں بربادکردیا

پاک سرزمین پارٹی برطانیہ کے مرکزی صدرچودھری محمدالطاف شاہد نے کہا ہے کہ پاکستان میں ڈیزاسٹرمینجمنٹ کافقدان ہے۔ حادثات دنیا بھر میں ہوتے ہیں مگر وہاں ڈیزاسٹر مینجمنٹ سے وابستہ ادارے اپنافعال کرداراداکرتے ہیں۔پاکستان میں حادثات اورسانحات کے بعدمتاثرین کی کسمپرسی،بے بسی اورمحرومی اس سانحہ سے بڑاسانحہ بن جاتی ہے۔پاکستان میں ڈیزاسٹرمینجمنٹ کیلئے فعال،متحرک اورموثراداروں کاقیام یاموجوداداروں کی اپ گریڈیشن ناگزیر ہے۔بلندپلازے تعمیر کرنے کی اجازت تودی جاتی ہے مگر فائربریگیڈ کے پاس تین منزل سے زیادہ بلندی پرآگ بجھانے یامتاثرین کوریسکیوکرنے کی قابلیت اورمہارت نہیں ہے۔وہ ایک سیمینار سے خطاب کررہے تھے۔چودھری محمدالطاف شاہدنے مزید کہا کہ بار بارپیش آنیوالے حادثات اورسانحات میں پاک فوج کے سوادوسرے ریاستی اداروں کی بدترین ناکامی کے باوجودوفاقی سمیت کوئی صوبائی حکومت اپنی ترجیحات درست کرنے اورقومی وسائل کا جائز استعمال یقینی بنانے کیلئے تیار نہیں ہے۔حکمران پارٹیوں کی سیاست مداخلت اوراپنے مخصوص حامی عناصر پرضرورت سے زیادہ ازشات نے پی آئی اے سمیت قومی اداروں کوبربادی کے دہانے پرپہنچا دیا۔انہوں نے کہا کہ پی آئی اے سمیت قومی اداروں میں سیاسی بھرتیاں قومی معیشت کیلئے بوجھ بن گئی ہیں۔حکمرانوں کی پھرتیاں اورقومی اداروں میں سیاسی بھرتیاں ہماری معیشت کوڈبودیں گی۔انہوں نے کہا کہ اداروں کی انتظامی اورمعاشی مضبوطی کاراستہ نجکاری نہیں بلکہ خودمختاری سے ہوکرجاتا ہے۔

اظہر سعید
شعبہ نشرواشاعت
pak7sarzameen@gmail.com

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *