ریاست ”کلہاڑا جمہوریت”کی متحمل نہیں ہوسکتی۔اشرف بھٹی

ہوسکتا ہے حکمرانوں کی کلہاڑیاں ان کے اپنے پیروں پرچل جائیں

لاہور.پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹرین کے مرکزی رہنما محمد اشرف بھٹی نے کہا ہے کہ ہماری ریاست ”کلہاڑاجمہوریت”کی متحمل نہیں ہوسکتی۔ہوسکتا ہے حکمرانوں کی کلہاڑیاں ان کے اپنے پیروں پرچل جائیں۔حکمرانوں کاجبر جمہوری اقداروروایات کی ضد ہے،حکمرانوں کے آمرانہ رویوں سے جمہوریت کے وجود کوشدیدخطرہ ہے۔پی ٹی آئی کوپرامن احتجاج اورمارچ سے ہرگز نہ روکاجائے۔حکمران جماعت کے کلہاڑی بردارکارکنان کیخلاف مقدمات درج کئے جائیں ۔حکمران جماعت کے کارکنان کی اشتعال انگیز ی پرتعجب ہے،یہ حکمرانوں کے نادان دوست ہیں۔کلہاڑیوں کے بل پرحکومت نہیں بچائی جاسکتی ۔وہ فردوس پارک میں ایک اجتماع سے خطاب کررہے تھے ۔محمداشرف بھٹی نے مزید کہا کہ حکمران کانچ کے گھرمیں بیٹھے ہیں وہ دوسروں کوخشت باری پرمجبورنہ کریں۔پی ٹی آئی کی قیادت بھی پرامن احتجاج ریکارڈ کرانے کیلئے اپنے کارکنان کوصبروتحمل کی تلقین کرے ۔انہوں نے کہا کہ حکمران جماعت اقتدار بچانے کیلئے جلاؤگھیراؤاورٹکراؤ کی سیاست سے اجتناب کرے ۔جمہوری ادوارمیں اپوزیشن پارٹیاں احتجاج کیا کرتی ہیں مگر آج تک کسی منتخب حکومت کے کارکنان نے اپنے ہاتھوں میں اپوزیشن کوڈرانے یادبانے کیلئے کلہاڑیاں نہیں اٹھائیں۔انہوں نے کہا کہ اگرحکمرانوں کوریاست کے سکیورٹی اداروں پراعتماد نہیں توپھر اقتدارچھوڑدیں ۔پی ٹی آئی کے کارکنان کوقانون شکنی سے روکنا حکمرانوں کے حواریوں کاکام نہیں ،پولیس کواپناکام کرنے دیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ افسوس حکمران سانحہ ماڈل ٹاؤن سے کچھ سیکھنے کیلئے تیار نہیں۔کمزورحکمران ایک اورقصاص تحریک کاسامنا نہیں کرسکتے۔انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کے نام نہادجانثاراس وقت کہاں تھے جس وقت پرویز مشرف نے جمہوریت پرشب خون ماراتھا ۔ان جانثاروں نے اس وقت کلہاڑیاں کیوں نہیں اٹھائی تھیں جب نوازشریف اورشہبازشریف کوائیرپورٹ سے واپس بھجوادیا گیا تھا ۔

Azam Ali
Media Cell

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *