ڈالر کی قیمت میں ایک روپیہ تیس پیسے کمی

لاہور (وائس نیوز گروپ آف میڈیا) انٹر بینک مارکیٹ میں امریکی ڈالر کی قیمت میں کمی ریکارڈ کی گئی ہے، چند روز تیزی کے بعد امریکی ڈالر کی قیمت میں ایک روپیہ تیس پیسے کی کمی ریکارڈ کی گئی۔ملک بھر کی انٹربینک مارکیٹوں میں اس وقت امریکی ڈالر 132 روپے 50 پیسے میں ٹریڈ ہو رہا ہے۔ ماہرین معیشت کا کہنا ہے کہ ڈالر کی قیمت میں کمی آنے سے ملک میں مہنگائی کا زور بھی ٹوٹے گا اور اشیائے خورونوش کے نرخ بھی کم ہوں گے ۔
پاکستانی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں آنے والے رد و بدل کی وجہ سے تاجروں اور کاروباری حضرات میں شدید بے چینی پائی جا رہی ہے۔ گزشتہ ایک ہفتے کے دوران ملک میں اشیائے خورو نوش کے علاوہ ضروریات زندگی کی مختلف اشیا کی قیمتوں میں تیزی سے اضافہ ہوا جس کی وجہ سے عوام کی پریشانیوں میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ روزمرہ استعمال کی جن اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ان میں زیادہ تر کا تعلق کھانے پینے سے تھا۔اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں آنے والے ردو بدل کی وجہ سے جہاں اندرون ملک اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہوا وہیں بین الاقوامی سطح پر پاکستانی تجارت کو بھی شدید نقصان پہنچا۔ قرضوں کی مالیت میں بے پناہ اضافہ ہونے سے تاجروں میں بددلی پھیلی۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ آنے والے دنوں میں اگر ڈالر کی قیمت میں ہونے والے اضافے کو کنٹرول نہ کیا گیا تو پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوجائے گا جس کے اثرات زندگی کی تمام شعبوں پر براہ راست مرتب ہوں گے۔ماہرین معیشت کا کہنا ہے کہ ڈالر کی قیمتوں میں ہونے والی کمی سے ملکی قرضوں کے بوجھ میں 110 ارب روپے کمی ہوگی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *