عدلیہ مخالف تقاریر پابندی ازخود کیس، نواز شریف، مریم نواز کو نوٹسز جاری

اسلام آباد: (چیف رپورٹر پنجاب سید خلیل الرحمن شاہ سے ) سپریم کورٹ نے عدلیہ مخالف تقاریر پابندی پر از خود نوٹس کیس میں سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کو نوٹسز جاری کر دیئے۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا محترم اٹارنی جنرل ہائیکورٹ کا حکم پڑھیں۔ جسٹس عظمت سعید نے کہا عدالتی حکم کو پڑھے بغیر ہی ڈھول پیٹا جاتا رہا۔ چیف جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیا پیمرا کا نمائندہ کہاں ہے ؟ جس پر اٹارنی جنرل نے کہا آپ نے کیس ایک بجے سماعت کیلئے لگایا تھا۔ چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا ٹھیک ہے کیس کو ایک یا 2 بجےسن لیتے ہیں۔چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا نواز شریف اور مریم نواز کو بھی نوٹس جاری کر رہے ہیں ، اگر ذاتی حیثیت میں نہیں آنا چاہتے تو ان کے وکیل آجائیں۔ جسٹس عظمت سعید نے کہا چاہتے ہیں کہ ان کی عدالت میں نمائندگی ہو۔ اٹارنی جنرل نے کہا میں نواز شریف اور مریم نواز کی دستیابی معلوم کر لیتا ہوں۔خیال رہے چیف جسٹس ثاقب نثار نے لاہور ہائیکورٹ کی جانب سے سابق وزیراعظم نواز شریف اور مریم نواز کی تقاریر نشر کرنے پر پابندی کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے پیمرا کو نوٹس جاری کرتے ہوئے لاہور ہائیکورٹ سے تمام ریکارڈ طلب کیا تھا۔یاد رہے لاہور ہائیکورٹ نے گزشتہ روز اپنے ایک فیصلے کے ذریعے سابق وزیراعظم نوازشریف ان کی صاحبزادی مریم نواز سمیت مسلم لیگ ن کے 16 رہنماؤں کی تقاریر اور بیانات نشر کرنے پر عبوری پابندی عائد کر دی تھی۔عدالت نے اپنے حکم میں کہا پیمرا 15 دن میں خود فیصلہ کرے کہ ان تقاریر کو نشر کیا جانا چاہیے یا نہیں ، عدلیہ مخالف توہین آمیز مواد کی خود سخت مانیٹرنگ کریں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *