رکشہ ڈرائیور کی حوس کا نشانہ بننے والی نیوی ہسپتال کی نرس دم توڑ گئی

ساہیوال (نامہ نگار)رکشہ ڈرائیور کی حوس کا نشانہ بننے والی نیوی ہسپتال کی نرس دوران علاج دم توڑ گئی ۔ تفصیلات کے مطابق رکشہ ڈرائیور اور اس کے ساتھی کے ہاتھوں جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی پاکستان نیوی کی نوجوان نرس کئی روز تک بے ہوشی کی حالت میں رہنے کے بعد بلآخر ہسپتال میں دم توڑ گئی ۔نرس کی موت کے بعد گرفتار رکشہ ڈرائیور اسلم کیخلاف قتل کا مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔ یاد رہے رکشہ ڈرائیور اسلم نے نیول ہسپتال کی نرس (ف) کو ساہیوال میں ایک ساتھی کے ساتھ ملکر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا اور مزاحمت پر تشدد کے بعد گلا دبا کر فرار ہو گئے تھے۔ لڑکی کو بیہوشی اور تشویشناک حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا تھاجہاں وہ 25جون سے زیر علاج تھی۔ حیات آباد چیچہ وطنی کے شہید فوجی کی بیٹی (ف) نیوی ہسپتال کراچی میں بطور نرس ڈیوٹی سرانجام دے رہی تھی جو عید کی چھٹیوں پر رات 12بجے نجی کمپنی کی بس پر ساہیوال پہنچی اورچیچہ وطنی کی بس میں بیٹھنے کیلئے لاری اڈا جانے کیلئے رکشہ کرائے پر لیا لیکن رکشہ ڈرائیور اسے ساہیوال بائی پاس لے گیا اور اپنے ایک ساتھی کیساتھ ملکر لڑکی کو زبر دستی اٹھا کر کھیت میں لے گیا اور زیادتی کا نشانہ بنانے کی کوشش کی، لڑکی کے شور مچانے اور مزاحمت کرنے پر ملزموں نے اس کا گلا دبادیا اوربیہوش ہونے پر برہنہ حالت میں چھوڑ کر فرار ہو گئے تھے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *