نمائندہ خصوصی اظہر اقبال مُغل کا پاکستان کی مایہ ناز ماڈل سایہ حسن سے خصوصی انٹرویو و گفتگو

نمائندہ: اسلام و علیکم
سایہ : و علیکم سلام
نمائندہ: جی کیا حال ہے کیسی ہو آپ
سایہ: جی شکر ہے اللہ کا بالکل ٹھیک ہوں
س: آپ نے اپنے کیئرئیر کا آغاز کب اور کہاں سے شروع کیا
ج: میں نے اپنے کیئرئیر کا آغاز 2016 میں کیا تھا۔وہ دن مجھے اچھی طرح یاد ہے،اس دن میں اوڈین سامعین گئی تھی۔ریمپ کرنے کا وہ یادگار دن تھا اسی دن میرے کیئرئیر کا آغاز ہوا
س:آپ نے اس فیلڈ ہی میں آنا پسند کیوں کیا
ج: اس فیلڈ میں انے کا میرا اپنا شوق تھا، میں شروع ہی سے اپنے آپ کو ویل ڈریس رکھتی ہوں
س: آ پ کو کھانے میں کیا پسند ہے
ج :جی مجھے امی جان کے ہاتھ کی بریانی بہت پسند ہے
س: آپ کو کوکنگ آتی ہے کیا اچھا بنا لیتی ہیں
ج: جی ہاں میں روزمرہ زندگی میں خود کھانا بناتی ہوں۔اور چائینز بہت اچھا بنا سکتی ہوں
س: اگر آ پ ماڈل نہ ہوتی تو کیا ہوتی
ج: جی مجھے شروع سے ہی ماڈلنگ کا شوق تھا اس لیئے میں ماڈل ہی ہوتی
س: آج کل جو کام ہو رہا ہے اس میں کوئی تبدیلی آنی چاہئے
ج: ج ہاں آنی چاہیئے پاکستان اب کافی ترقی میں جارہا ہے لیکن نیو ٹیلنٹ کو لازمی چانس دینا چاہیئے
س: آپ اپنے کام سے مطمئن ہیں
ج: جی ہاں ہوں بھی اور نہیں بھی کیوں کہ میں بہت کچھ کرنا چاہتی ہوں
س: کوئی ایسی خواہش جو آج تک پوری نہ ہو سکی ہو
ج: علی ظفر سے شادی کرنا چاہتی ہوں یہی خواہش ہے بس
س:مستقبل میں کیا کرنے کا اردہ ہے
ج:میں مستقبل میں اچھی سنگر بننا چاہتی ہوں
س:ا گر انڈیا جا کر کام کرنے کا موقع ملا تو کریں گی
ج: جی نہیں مجھے پسند نہیں کہ میں انڈیا جا کر کام کروں اب اتنے برے دن بھی نہیں آئے
س:فلم میں کام کی آفر ہو تو کریں گی
ج: جی ضرور کروں گی
س: کس پاکستانی ہیروکے ساتھ کام کرنا پسند کریں گی
ج: علی ظفر کے ساتھ کام کرنا پسند ہے
س:شادی کب کر رہی ہیں
ج: شادی کر لوں گی اگر۔۔۔۔۔۔ سمجھ گئے نا
س:کس شخصیت سے بہت متاثر ہیں
ج: جی میں ماڈل زارا عابد صاحبہ سے متاثر ہوں
س: آپ کو وزیراعظم بنا دیا جائے تو پہلا کام کیا کریں گے
ج: جی اگر ایسا ہو جائے تو سب سے پہلے لوڈشیڈنگ ختم کروں گی اور تعلیمی نظام کو ٹھیک کروں گی،لڑکیوں کو اُن کے حقوق دلاؤں گی جو لڑکیاں اس معاشرہ کے ڈر سے پیچھے ہٹ جاتی ہیں اپنے حق کی خاطر آواز بلند نہیں کرتیں ان کی آواز بنوں گی ان کو حق دلاؤں گی
س:پاکستانی عوام کو کوئی پیغام دینا چاہیءں گے
ج: پاکستانی ہونے کے ناطے صرف پاکستانی قوم سے اپیل کروں گی کہ لڑکیاں بھی اس معاشرہ کا ہی حصہ ہیں،اپنی بچیوں پر بھروسہ اور اعتماد کریں ان کو اپنی زندگی جینے کا حق دیں،ہمارے ملک میں جتنا ٹیلنٹ ہے سب تنگ نظری کا شکار ہو جاتا ہے کتنی ہی لڑکیاں ہیں جنہیں موقع نہیں ملتا اور ان کا ٹیلنٹ ضائع ہو جاتا ہے
نمائندہ: آپ کا بہت شکریہ سایہ جی آپ نے ہمارے لیئے وقت نکالا
سایہ: میری خوش قسمتی ہے کہ آپ لوگوں نے مجھے خیالات کا اظہار کرنے کا موقع دیا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *